لاہور(اسپورٹس رپورٹر) چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ حکومت صحت کے ساتھ ساتھ کھیلوں کے شعبہ پر بھی توجہ دے۔ مردوں کی طرح خواتین کے لیے بھی کھیل کے یکساں مواقع فراہم کیے جائیں۔ ان خیالات کا اظہار چیف جسٹس آف پاکستان نے لاہور میں کھیلی جانے والی نیشنل ویمن فٹبال چیمپیئن شپ کے فائنل کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ قومی ویمنز فٹبال چیمپین شپ کا ٹائٹل پاکستان آرمی ٹیم نے جیت لیا۔ چیمپن شپ کے فائنل میں آرمی اور واپڈا کی ٹیموں کے درمیان مقابلے کا فیصلہ پنلٹی کسکس پر ہوا۔ پنجاب اسٹیڈیم لاہور میں منعقد ہونے والی چیمپیئن شپ کے فائنل میچ میں کھیل کے 41 ویں منٹ میں آرمی نے گول کیا لیکن واپڈا کی جومن نے چند لمحے بعد ہی مقابلہ برابر کر دیا۔ سخت کوشش کے باوجود دونوں ٹیموں میں سے کوئی بھی بعد میں گول کرنے میں کامیاب نہ ہوئی۔ پنالٹی ککس پر آرمی نے0-3 سے میدان مار لیا۔ چیمپیئن شپ کی اختتامی تقریب کے مہمان خصوصی چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کیے۔ پاکستان آرمی کی فاتح ٹیم 3 لاکھ روپے انعام کی حقدار بنی۔ رنرز اپ واپڈا کو 2 لاکھ ملے۔ بہترین کھلاڑی خدیجہ (آرمی) اور بہترین سکورر معصومہ چوہدری (ماڈل ٹا ئون اکیڈمی)نے 40، 40 ہزار حاصل کئے۔ بہترین گول کیپر ماہ پارہ (واپڈا) اور فیئر پلے،ٹرافی حاصل کرنے والی ٹیم پنجاب کو 30،30ہزار روپے دیئے گئے۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ پاکستان فٹبال فیڈریشن کے صدر فیصل صالح حیات اور ان کی ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے کہ چار سال تک ان کی فیڈریشن معطل رہنے کے باوجود بحال ہونے کے لیے بین الاقوامی مقابلوں میں اچھے نتائج حاصل کر رہی ہے۔ حکومت کو چاہیے کہ وہ پاکستان فٹبال فیڈریشن کو فنڈز دینے کے ساتھ ساتھ ان کی مدد کرئے تاکہ ہمارا فٹبال کا کھیل ترقی کرئے۔

Subscribe Our Monthly Newsletter